جیو کی بندش کا معاملہ: میر شکیل الرحمان کی چیف جسٹس سے ازخود نوٹس لینے کی استدعا | پاکستان

اسلام آباد: سپریم کورٹ میں جیو کے ملازمین کی تنخواہوں کے معاملے پر جنگ گروپ کے مالک میر شکیل الرحمان نے چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار سے جیو کی بندش کے معاملے پر ازخود نوٹس لینے کی استدعا کی اور کہا کہ گن پوائنٹ پر ہمارا کاروبار لوٹا جارہا ہے۔

سپریم کورٹ میں جیو کے ملازمین کی تنخواہوں سے متعلق کیس کی سماعت چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کی۔ جنگ گروپ کے مالک میرشکیل الرحمان عدالت میں پیش ہوئے تو چیف جسٹس نے کہا آپ کا بہت بڑا میڈیا ہاؤس ہے، آپ کے ادارے کے لوگوں کو تنخواہیں نہیں مل رہیں، تنخواہیں ادا نہ کرنے کی وجہ کیا ہے۔

اس پر میر شکیل الرحمان نے کہا کہ میں اپنے ساتھیوں سے بہت شرمندہ ہوں اور معافی مانگتا ہوں، میرا فرض بنتاہے کہ وقت پر ملازمین کا حق ادا کروں، حکومت سے اشتہارات کے پیسے لینے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کے پی کے حکومت نے ہمارے اشتہارات بند کیے ہوئے ہیں، ادارہ بند بھی رہا ہے لیکن اب کھل چکا ہے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ آپ کا ادارہ کہاں کہاں سے بند ہوا ہے، ہمیں بتائیں، آپ کے پاس لائسنس ہےقوت کے ساتھ اب چینل کو کسی جگہ بند نہیں کیا جا سکتا۔

انہوں نے کہا کہ اگر خیبرپختونخوا حکومت اشتہار نہیں دیتی تو مجبور نہیں کرسکتے، اشتہارات پر صرف تصویر کی حد تک پابندی لگائی گئی، کسی حکومت کو اشتہار دینے سے منع نہیں کیا۔

چیف جسٹس نے کہا کہ اگر آپ کا پیسہ رکا ہوا ہو تو اس کو دیکھ لیتے ہیں، اس معاملے کو مجموعی طور پر انسانیت کے حوالے سے لے لیتے ہیں، ملازمین اپنے گھر کے اخراجات کیسے چلائیں گے، آپ بھی اپنے بچوں کے لیے سہولت پیداکریں، آپ کا ادارہ سب سے بڑا ہے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ آپ کو کچھ دکھانا چاہتے تھے وہ نہیں دکھا رہے، محبت دیتے ہیں تو عدلیہ بھی محبت دیتی ہے، عدلیہ کسی کے خلاف نہیں ہے۔

جسٹس عمر عطا بندیال نے کہا کہ حکومت نے اگر واجبات نہیں دیے تو ان سے پوچھا جا سکتا ہے، جسٹس اعجاز الاحسن نے کہاکہ جنگ اور جیو کا ماہانہ سیلری بل کتنا ہے۔

میر شکیل الرحمان نے کہا کہ میرے علم میں نہیں لیکن اندازہ ہے جیو کا بل 25 کروڑ ہے۔

جسٹس اعجازالاحسن نے استفسار کیا کہ جیو نیوز کی ماہانہ آمدن کتنی ہے، میر شکیل الرحمان نے کہا آمدن نہیں ہوگی تو تنخواہیں کیسے ادا کروں گا مگر ہم 78فیصد ادائیگیاں کر چکے ہیں۔

چیف جسٹس نے کہا کہ تنخواہوں کی ادائیگی کے لئے تین ماہ کا وقت دینا ممکن نہیں ہے۔

عدالت نے جیو نیوز کی تنخواہوں کی ادائیگی کے معاملے پر سینیئر اینکر پرسن حامد میر کی سربراہی میں کمیٹی بنا دی۔

کمیٹی میں جیو نیوز کے دو رپورٹر قمبر زیدی اور وقار ستی جبکہ دو انتظامیہ کے نمائندے بھی شامل ہوں گے۔

Source link

The post جیو کی بندش کا معاملہ: میر شکیل الرحمان کی چیف جسٹس سے ازخود نوٹس لینے کی استدعا | پاکستان appeared first on Savera.pk.



Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں