مشرف کی 24 گھنٹوں میں پاکستان واپسی کا امکان | پاکستان

مشرف کسی بھی وقت ڈائریکٹ یا ان ڈائرکٹ فلائٹ سے پاکستان پہنچ سکتے ہیں, سیکرٹری جنرل اے پی ایم ایل—فائل فوٹو۔

اسلام آباد: سابق صدر جنرل (ریٹائرڈ) پرویز مشرف کی آئندہ 24 گھنٹوں میں پاکستان واپسی کا امکان ہے۔

پرویز مشرف کی سیاسی جماعت آل پاکستان مسلم لیگ کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر امجد نے بتایا کہ سابق صدر کی وطن واپسی کی تیاریاں آخری مراحل میں ہیں۔

ڈاکٹر امجد نے بتایا کہ پرویز مشرف کے سفر کے انتظامات مکمل کئے جارہے ہیں اور فلائٹس کا جائزہ لیا جارہا ہے۔

سیکرٹری جنرل اے پی ایم ایل کا کہنا تھا کہ پرویز مشرف کا پاسپورٹ ابھی ان بلاک نہیں ہوا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ مشرف کسی بھی وقت ڈائریکٹ یا ان ڈائرکٹ فلائٹ سے پاکستان پہنچ سکتے ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ مشرف اسلام آباد میں لینڈ کریں گے جبکہ پاسپورٹ بلاک ہونے کی وجہ سے انہیں سیٹ ریزرو کرنے میں مشکلات پیش آرہی ہیں۔

اس سے قبل سابق صدر  نے سپریم کورٹ کا حکم ماننے سے انکار کرتے ہوئے سپریم کورٹ میں پیش نہ ہونے کا فیصلہ کیا تھا۔

سپریم کورٹ نے سنگین غداری کیس میں سابق صدر پرویز مشرف کو 14 جون کو دوپہر 2 بجے تک عدالت میں پیش ہونے کی مہلت دی تھی۔

سماعت کے دوران پرویز مشرف کے وکیل نے مؤقف اختیار کیا کہ پرویز مشرف بغاوت کے مقدمے کا سامنا کرنے کو تیار ہیں تاہم تحفظ کی ضمانت دی جائے۔

اس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ پہلے کہہ چکے کہ پرویز مشرف واپس آئیں انہیں تحفظ دیں گے تاہم لکھ کرگارنٹی دینے کے پابند نہیں۔

چیف جسٹس نے کہا کہ پرویز مشرف سیاستدانوں کی طرح میں آرہا ہوں کی گردان مت کریں، انہیں کس بات کا تحفظ چاہیے اور کس خوف میں مبتلا ہیں، اگر وہ کمانڈو ہیں تو آکر دکھائیں، اتنا بڑا کمانڈو کیسے خوف کھا گیا۔ 

پرویز مشرف کے وکیل نے کہا کہ ان کے موکل کو رعشہ کی بیماری ہے جس کے لیے میڈیکل بورڈ ہونا ہے جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ وہ ایئر ایمبولینس میں آجائیں ہم میڈیکل بورڈ بنا دیتے ہیں۔

سپریم کورٹ میں آج کیس کی سماعت ہونی ہے۔

کچھ روز قبل پرویز مشرف کا بیان سامنے آیا تھا جس میں ان کا کہنا تھا کہ  زندگی میں کبھی الجھن کا شکار نہیں ہوا تاہم پاکستان جانے کے بارے میں بہت کنفیوژ ہوں۔

انہوں نے مطالبہ کیا تھا کہ تمام مقدمات میں ضمانت دی جائے، 26 جولائی سے پہلے فیصلہ سنایا جائے اور گرفتار نہ کرنے کی ضمانت دی جائے۔

مشرف کا کہنا تھا کہ 6 دیگر سیاسی مقدمات ہیں ان کا کیا ہوگا؟ یقین دہانی کرائی جائےکہ ای سی ایل میں نام شامل نہیں کیاجائےگا۔

سابق صدر کے خلاف سنگین غداری کیس زیر سماعت ہے جس میں عدالت نے ان کی انٹرپول کے ذریعے گرفتاری کا حکم دے رکھا ہے۔

Source link

The post مشرف کی 24 گھنٹوں میں پاکستان واپسی کا امکان | پاکستان appeared first on Savera.pk.



Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں